صنعتی شعبے کے مسائل کیلئے تمام تر کاوشیں بروئے کار لانے کا اعادہ: انجینئر سہیل بن رشید

faisalabad-chamber-of-commerce-industryمورخہ 4 نومبر 2013ء
فیصل آباد ( زرعی میڈیا ڈاٹ کام) صدر ایوان صنعت و تجارت فیصل آباد انجینئر سہیل بن رشید نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اپنے دور صدارت میں صنعتی شعبے کے مسائل کیلئے تمام تر کاوشیں بروئے کار لانے کا اعادہ کیا ہے اور کہا کہ توانائی کے سنگین بحران میں صنعتی شعبے کی گروتھ نا ممکن ہے اس موقع پر سینئر نائب صدر ایوان ریاض الحق اور نائب صدر چوہدری محمد اصغربھی موجود تھے۔ انہوں نے حکومت کے گیس بندش کے مجوزہ 3 ماہ بندش پلان کو مسترد کرتے ہوئے گیس کی دانشمندانہ لوڈ مینجمنٹ کا مطالبہ کیا اور کہا کہ انڈسٹریل سیکٹر پہلے ہی بجلی کی طویل لوڈشیڈنگ ، ٹیکسز کی بھاری شرح، بنکس کے مارک اپ سمیت دیگر مسائل کی وجہ سے شدید زبوں حالی کا شکار ہے اور اگر حکومت نے 3 ماہ کیلئے گیس بند کر دی تو صنعتی شعبہ مکمل طور پر بند ہو جائیگا جس سے صرف ٹیکسٹائل سیکٹرسے قریباً ایک کروڑ مزدور بے روزگار ہوجانے کا خدشہ ہے جو امن و امان سمیت دیگر مسائل کو جنم دیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ فیصل آباد شہر کو گیس اور بجلی کی عدم فراہمی میں نظر انداز کیا جا رہا ہے جو کہ سراسر غلط ہے۔ انہوں نے صنعتی مسائل کو اجاگر کرنے میں میڈیا کے فعال کردار کو سراہا اور کہا کہ میڈیاکے مرہون منت کئی ایک مسائل کا ازالہ ممکن ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ وہ برآمدکنندگان کے زیر التواء کلیمز کی ادائیگی کیلئے کاوش کریں گے جبکہ ایکسپورٹ ڈویلپمنٹ فنڈ سے فیصل آباد کی مصنوعات کی تشہیر اور برآمدات میں اضافہ کیلئے ایکسپو سنٹر کا قیام ناگزیر ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ٹیکسٹائل سیکٹر کو جدید خطوط پر استوار کرنے کیلئے ٹیکسٹائل ٹیکنیکل ٹریننگ انسٹیٹیوٹ قائم کیا جا رہا ہے تا کہ انڈسٹری کو ہنر مند افرادی قوت کی فراہمی ممکن ہو سکے۔ انہوں نے کہا کہ چیمبر کے R & D اور I.T کے شعبہ جات کو اپ گریڈ کرنے کیلئے تمام تر وسائل بروئے کارلاتے ہوئے ممبران کو سہولیات فراہم کی جائیں گی۔ انہوں نے فیصل آباد میں ہائیکورٹ بنچ کے قیام کے دیرینہ مطالبہ کو بھرپور طریقے سے اٹھانے کا اعادہ کیا اورکہا کہ سستے انصاف کی جلد فراہمی فیصل آباد کے شہریوں کا حق ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ فیصل آباد ایئرپورٹ کو انٹرنیشنل معیار کے مطابق اپ گریڈ کیا جانا چاہیئے تا کہ یہاں سے نہ صرف اندرون ملک بلکہ بیرون ممالک پروازیں شروع ہو سکیں اور بزنس کمیونٹی کو لاہور یا اسلام آباد کے طویل سفر سے چھٹکارا حاصل ہو سکے۔ انہوں نے کہا کہ اگر فیصل آباد کے سٹیم پاور سٹیشن کو 31 ایم ایم سی ایف ڈی گیس مل جائے تو اس سے 120 میگاواٹ بجلی کی پیداوار ممکن ہے۔ فیصل آباد میں انفارمیشن ٹیکنالوجی پارک کا قیام بھی ناگزیر ہے۔

صنعتی شعبے, Faisalabad Chamber of Commerce and Industry (FCCI),
Copy Rights @ ZaraiMedia.com
صنعتی شعبے, Faisalabad Chamber of Commerce and Industry (FCCI),

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More