پاکستان ورلڈ فوڈ پروگرام کو خوراک عطیہ کرنے والا دوسرا بڑا ملک

Wheat
Wheat

اسلام آباد: پاکستان نے 2013 میں ورلڈ فوڈ پروگرام ( ڈبلیو ایف پی) کو 150,000 میٹرک ٹن گندم فراہم کی تھی اور اس طرح یہ اقوامِ متحدہ کے ورلڈ فوڈ پروگرام کے لئے خوراک عطیہ کرنے والا دوسرا بڑا ملک بن چکا ہے۔

یہ امداد اس وقت دی گئی جب ملک میں ہنگامی بنیادوں پر خوراک کی ضرورت تھی اور غذائی قلت بحران کو چھورہی تھی۔

ڈبلیو ایف پی کے مطابق سال 2013 سے 2015 کے درمیان 535 ملین امریکی ڈالر سے پاکستان میں 83 لاکھ افراد کو مدد و معاونت درکار تھی ۔ ان میں فاٹا کی آبادی کیلئے معاشی مواقع پیدا کرنے، کمیونٹی سطح پر قدرتی حادثات و آفات کیخلاف تیاری اور ملک کے متاثرہ علاقوں میں عوام میں خوراک و تعلیم کی ضروریات پورا کرنا شامل تھا ۔ اس میں معاونت کے بغیر اس پروگرام کو شدید دھچکا لگ سکتا تھا۔

145اس سال تقریباً 5.5 ارب روپوں کی مد میں پاکستان خوراک عطیہ کرکے ڈبلیو ایف پی کے دوسرے بڑے عطیہ کرنے والے ممالک میں شامل ہوچکا ہے۔ اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ پاکستان اپنے لوگوں کی مدد کرنے میں سنجیدہ ہے۔

پاکستان میں ڈبلیو ایف پروگرام کے نمائیندے امجد جمال نے بتایا کہ دیگر ممالک نے بھی انتیس ملین ڈالر کی امداد فراہم کی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ 2012 میں 70,000 میٹرک ٹن گندم سیلاب سے متاثرہ اور بے گھر ہونے والے افراد میں کامیابی سے تقسیم کی گئ۔

انہوں نے بتایا کہ اگلے تین برس میں کل 540 ملین ڈالر کی رقم سے مزید 80 لاکھ افراد کی مدد اور معاونت کی جائے گی۔ جبکہ فاٹا اور دیگر علاقوں میں لوگوں کی مالی امداد اور معاشی بہتری کیلئے بھی اقدامات کئےجائیں گے۔ اس کے علاوہ خوراک کی کمی اور غذائی عدم تحفظ کے شکار ضلعوں میں خاص اقدامات کئے جائیں گے۔ڈان

فوڈ سیکورٹی, Food security,

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More