سیڈ انڈسٹری ‘ پلانٹ بریڈنگ اور دیگر شعبوں کے لوگ مربوط کاوشوں کے ذریعے ملک میں غذائی استحکام یقینی بنانے پر توجہ دیں

پاکستان میں سیڈ فزیالوجی
پاکستان میں سیڈ فزیالوجی

فیصل آباد 5 اکتوبر 2013ء (زرعی میڈیا ڈاٹ کام) پاکستان میں سیڈ فزیالوجی کے ساتھ ساتھ جینیاتی اور کراپ سائنس کے شعبے میں جدید اصلاحات متعارف کراتے ہوئے عالمی سطح پر نئے رحجانات اپنائے جائیں ‘ اس مقصد کے لئے سیڈ انڈسٹری ‘ پلانٹ بریڈنگ اور دیگر شعبوں کے لوگ مربوط کاوشوں کے ذریعے ملک میں غذائی استحکام یقینی بنانے پر توجہ دیں ‘ ان باتوں کا اظہار مقررین نے زرعی یونیورسٹی فیصل آباد کے شعبہ کراپ فزیالوجی کے زیر اہتمام سیڈ فزیالوجی سے متعلق تین روزہ بین الاقوامی کانفرنس کے آخری روز خطاب کرتے ہوئے کیا ‘ آخری سیشن کی صدارت وفاقی فوڈ کمشنر وزارت نیشنل فود سکیورٹی ڈاکٹر شکیل احمد نے کی جبکہ مہمان اعزاز پائیونئر پاکستان کے ڈاکٹر آصف علی اور ایمکی سیڈ ز کے سجاد ملک تھے انہوں نے کہا کہ پبلک اور پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت بر ئیڈنگ اور مارکتنگ کے شعبوں میں بہتری لاتے ہوئے زیادہ پیداوار کا حامل تصدیق شدہ بیج بڑی مقدار میں چھو ٹے کسانوں کو وافر مقدار میں دیا جا سکتا ہے ‘ ڈاکٹر شکیل احمد نے بتایا کہ وفاقی حکومت وزارت غذائی استحکام کے تحت مختلف سائنسی اداروں اور زرعی شعبے کے مختلف سائنسدانوں کے ساتھ باہمی مشاورت کے ذریعے پالیسی سازی پر توجہ دے رہی ہے تاکہ اس کے ثمرات بڑھتی ہوئی آبادی کو خوراک یقینی بنانے کے لئے کیا جا سکے ‘ ڈاکٹر شہزاد بسرا نے کہا کہ کہ ملک میں بیج کی انڈسٹری کے لیے تربیت یافتہ افرادی قوت تیار کرنے کے لیے یونیورسٹی نے بی ایس سی (آنرز) سیڈ سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کا نیا پروگرام متعارف کرایا گیا ہے جس سے یہ شعبہ مزید مضبوط ہو گا‘ انہوں نے کہا کہ اس قسم کی سٹیک ہولڈرز کانفرنسوں کے ذریعے جہاں ملکی سطح پر ہونے والی کاوشوں کو یکجا کرنے کا موقع ملتا ہے وہاں غیر ملکی سائنسدانوں کے ذریعے نئی کاوشیں اپنانے میں بھی مدد ملتی ہے ‘ ڈاکٹر عر فان افضل نے کہا کہ زرعی یونیورسٹی فیصل آباد میں نئی شروع کی جانے والی ڈگری بی ایس سی آنرز سیڈ ٹیکنالوجی جہاں بریڈنگ اور دیگر شعبوں کے مر بوط رابطوں کے ذریعے انٹر ڈسپلنری اپروچ کی حامل ہو گی بلکہ اس سے مثبت نتائج بھی حاصل ہو سکیں گے ‘اس سٹیک ہولڈر سیشن میں مختلف سیڈ کمپنیوں کے نمائندوں کے علاوہ سرکاری و غیر سرکاری اداروں کے ماہر ین نے بیج کے متعلق مختلف امور پر سیر حاصل بحث کی ڈاکٹر آصف علی نے کہا کہ اس ورکشاپ میں غیر ملکی مندوبین نے شرکاء کو سیڈ کی مینجمنٹ اور پیداوار کے جدید رجحانات سے آگاہ کیاجس سے ان کی مہارت میں اضافہ ہو گا سیشن میں ڈاکٹر عرفان افضل اور دیگر شرکا نے بھی مختلف تجاویز پیش کیں ‘ آخر میں مہمان خصوصی نے مہمانوں اور شرکاء میں شیلڈز اور سرٹیفکیٹس بھی تقسیم کئےِ

Copy Rights @ ZaraiMedia.com

uaf-05oct-2013

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More