فصلوں کی موثر زہر پاشی

فصلوں کی موثر زہر پاشی
فصلوں کی موثر زہر پاشی

September 15, 2013

زرعی میڈیا ڈاٹ کام: جڑی بوٹیاں، سنڈیاں اور بیماریاں فصلات کی پیداوار میں بہت بڑی کمی کا سبب بنتی ہیں اور بعض اوقات فصلوں مکمل طور پر ناکام ہو جاتی ہیں ۔ان کے تدارک کے لیے کیمیائی زہروں کا استعمال ایک موثر طریقہ ہے تاہم ان زہروں کی صحیح افادیت اور مطلوبہ نتائج کے حصول کے لیے ایک خاص حکمت عملی مرتب کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ یہ زہریں نہ صرف زمین ، پانی، فضاء اور جانداروں کے تمام ایکو سسٹم کے لیے مضر ہیں بلکہ ناقص سپرے مشینری اور غلط طریقہ استعمال کی وجہ سے زہر کا کافی حصہ ضائع ہو جاتاہے جس سے نہ صرف فصلوں کی پیداوار ی لاگت بڑھ جاتی ہے بلکہ فضائی اور زمینی آلودگی سے انسانوں اور جانوروں کی صحت پر برے اثرات مرتب ہوتے ہیں لہٰذا ان زہروں کے استعما ل کے متعلق زرعی ماہرین سے معلومات حاصل کریں ۔

سپرے سے مطلوبہ نتائج حاصل کرنے کے لیے کیڑ وں، سنڈیوں اور بیماریوں کے مربوط طریقہ انسدادکے اصولوں پر عمل کریں اور ہمیشہ کیڑوں کی نقصان کی معاشی حد کا صحیح تعین کریں۔اندھا دھند سپرے کرنے سے گریز کریں۔کیڑوں اور بیماریوں کی اچھی طرح تشخیص کر کے موزوں دوائی کا انتخاب کریں۔سپرے صبح یا شام کے وقت کریں۔ بارش اور تیز ہوا میں سپرے بند کردیں ۔سپرے مشین کی کیلی بریشن (Calibration)کریں ۔سپرے مشین کو مقررہ حد تک پانی سے بھر لیں۔ اب خالی پانی کو فصل پر اس طرح سپرے کریں گویا آپ زہر کا سپرے کر رہے ہیں۔ جب مشین میں موجود پانی ختم ہو جائے تو سپرے شدہ فصل کا رقبہ معلوم کریں۔ فرض کریں کہ یہ رقبہ ایک ایکڑ کا آٹھواں حصہ بنتا ہے لہذا ایک ایکڑفصل کو سپر ے کرنے کے لئے آٹھ ٹینکی پانی درکار ہو گا۔ مذکورہ ایک ایکڑ رقبہ پر سپرے کرنے کے لئے زہر کی سفارش کردہ فی ایکڑ مقدار آٹھ حصوں میں برابر تقسیم کرکے ایک حصہ فی ٹینکی پانی میں ملائیں۔زہر ڈالنے سے پہلے مشین کا آدھا حصہ پانی سے بھر لیں اس کے بعد زہر ڈال کر باقی پانی ڈالیں۔ صحیح پریشر بنانے کے لئے مناسب تعداد یعنی 16ہینڈل فی منٹ لگائیں۔ سنڈیوں اور کیڑوں کے تدارک کے لیے ہالوکون اورجڑی بوٹیوں کی تلفی کے لیے ٹی جیٹ یا فلیٹ فین نوزل استعمال کریں۔ بوم سپریئر کی اونچائی ڈیڑھ تا دو فٹ رکھیں۔ نہ جھکنے والی بوم استعمال کریں۔ بوم کے سرے پر اینگل نوزل استعمال نہ کریں۔ پتوں کی نچلی سائیڈ پر زہرپاشی کے لئے ڈراپ لیگ نوزل استعمال کریں۔ اگر مسٹ بلور سپریئر ٹریکٹر سے چلنے والا ہو تو کھیت میں فصل دونوں طرف سے 50فیصد کی شرح سے سپرے کریں اور اگر کندھے والا ہو تو ایک وقت میں چار قطاروں سے زیادہ سپرے نہ کریں۔

سنڈیوں کی تلفی کے لیے پانی کی مقدار 80لیٹر جبکہ رس چوسنے والے کیڑوں کے لیے 120لیٹر فی ایکڑ رکھی جائے ۔نہر کا یا کھاراپانی استعمال نہ کیا جائے ۔صاف ستھرا اور شفاف پانی استعمال کیا جائے ۔ حفاظتی کپڑے، دستانے اور سر ڈھانپنے کے لئے کور استعمال کریں۔ چہرے کے لئے حفاظتی شیلڈ، ربڑ کے جوتے اور ناک کے ماسک استعمال کریں۔ تولیہ، صابن، پانی اور ابتدائی طبی امداد کا سامان نزدیک ہی موجود رکھیں۔ انجن والا سپریئر چلاتے وقت کانوں کے لئے پلگ استعمال کریں۔ بند نوزل یا پائپ کو منہ سے پھونک مارکر کبھی نہ کھولیں۔ زہر آلود ہ آلات ادھر اُدھر نہ رکھیں۔ زہر والی خالی بوتلوں کو فوری تلف کریں۔

زہر کے چھڑ کاؤ کے بعد گوڈی ہر گز نہ کریں۔ٖسپرے کے بعد جڑی بوٹیوں کو چارہ کے طور پر استعمال نہ کریں۔سپرے خالی پیٹ نہ کریں اور سپرے کے دوران کھانے پینے سے پرہیز کریں۔سپرے کے دوران مخصوص کپڑے اور دیگر حفاظتی سامان استعمال کریں۔سپرے کے بعد کھلے پانی میں نہائیں اور کپڑے تبدیل کریں۔ اگر سپرے کے دوران زہر کا اثر ہونے لگے تو فوراً ڈاکٹر سے رجوع کریں اور اپنے ساتھ زہرکی خالی بوتل بھی لے کر جائیں تاکہ ڈاکٹر کو تشخیص اور علاج میں سہولت ہو۔ سپرے کے بعد مشین کو اچھی طرح سے دھو کر رکھیں۔بہتر ہے کہ جڑی بوٹیوں اور کیڑے مار زہروں کے لئے علیحٰدہ علیحٰدہ مشین استعمال کریں۔

Copy Rights @ ZaraiMedia.com. Please do not copy without permission.  Contact:contact@zaraimedia.com

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More