جاپان کے تعاون سے پنجاب میں سانجھے نہری نظام کے ذریعے زرعی آبپاشی کے منصوبہ

Secretary Agriculture, Punjab Dr. Ijaz Munir
Secretary Agriculture, Punjab Dr. Ijaz Munir

لاہور 7ستمبر 2013: جاپان کے تعاون سے پنجاب میں سانجھے نہری نظام کے ذریعے زرعی آبپاشی کے منصوبہ (سیاپ) کی توسیع زراعت اور کاشتکاروں کیلئے مفید ہو گی۔ یہ بات سیکرٹری زراعت پنجاب ڈاکٹر اعجاز منیر نے آج لاہور میں جاپان انٹرنیشنل کوآپریشن ایجنسی (JICA) کے وفد سے نہری پانی کی بچت اور پیداوار میں اضافہ سے متعلق حکومت جاپان کے تعاون سے جاری منصوبہ (سیاپ) کی سرگرمیوں کے بارے میں بریفنگ اجلاس کے دوران کہی۔

اجلاس میں JICA کی طرف سے منصوبہ کے چیف ایڈوائزر نوریو کیونو، کوآرڈینیٹر ٹریننگ تاکاشی فیوجی ساکی، سینئر ایڈوائزر ایگریکلچرل ڈویلپمنٹ ڈاکٹر ناگایوناری ہیدی، پراجیکٹ ایویلوایشن کنسلٹنٹ سمبوکومیاکاوا کے علاوہ محکمہ زراعت،آبپاشی اور پیڈا (PIDA) کے افسران نے شرکت کی۔ سیکرٹری زراعت پنجاب کو بتایا گیا کہ جاپان انٹرنیشنل کوآپریشن ایجنسی (JICA) کی طرف سے 200ملین ین لاگت کے منصوبہ (سیاپ) کے تحت لوئر چناب کینال فیصل آباد، بہاولنگر کینال سرکل کے کمانڈ ایریا میں 3000 ایکڑ رقبہ کو بذریعہ لیزر لینڈ لیولنگ ہموار کیا گیا اور 1263 ایکڑ رقبہ پر فصلات کی کھیلیوں پر کاشت کے نمائشی پلاٹ لگائے گئے۔ سیکرٹری زراعت کو مزید بتایا گیا کہ منصوبہ کے متعلقہ اضلاع میں محکمہ زراعت کے تعاون سے کاشتکاروں کی فنی رہنمائی اور جدید زرعی ٹیکنالوجی کے فروغ کیلئے 20ایکڑ رقبہ پر ٹنلز جبکہ 30ایکڑ رقبہ پر ہائی ایفی شینسی اریگیشن سسٹم کی تنصیب عمل میں لائی گئی ہے۔

سیکرٹری زراعت کو بتایا گیا کہ کاشتکاروں میں پانی کی بچت، دستیاب پانی کے باکفایت استعمال کے ذریعے پیداوار میں اضافہ سے متعلق بروشرز، پوسٹرز اور ویڈیو ڈاکومنٹیریز بھی کاشتکاروں کو فراہم کی گئی ہیں اور یہ منصوبہ مارچ 2014 میں پایۂ تکمیل تک پہنچے گا۔ JICA مشن آئندہ دو ہفتے تک پنجاب کے متعلقہ اضلاع میں جاری ترقیاتی سرگرمیوں کا جائزہ لینے کے ساتھ چیئرمین پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ پنجاب، سیکرٹری زراعت اور سیکرٹری آبپاشی سے ملاقاتیں کرکے تفصیلی ایویلوایشن رپورٹ مرتب کرے گا۔ سیکرٹری زراعت پنجاب نے وفد کو بتایا کہ پنجاب میں آبپاش زراعت کی پیداواری صلاحیت بڑھانے کے لئے 36ارب روپے مالیت کے میگا پراجیکٹ پر عملدرآمد جاری ہے جس کے تحت ایک لاکھ 20ہزار ایکڑ رقبہ پر ڈرپ ایریگیشن کی تنصیب ،9ہزار آبپاش کھالوں کی اصلاح ا ور 3ہزار لیزر لینڈ لیولر سبسڈی پر فراہم کیے جا رہے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ لیزر یونٹس کی خرید کے لئے کاشتکاروں کو 2لاکھ 25ہزار روپے فی یونٹ سبسڈی فراہم کی جا رہی ہے جبکہ ڈرپ نظام آبپاشی کی تنصیب کے لئے کل لاگت کا 60فیصد حکومت اور باقی 40فیصد زمیندار خود برداشت کرے گا۔سیکرٹری زراعت نے بتایا کہ اس منصوبہ کے تحت اب تک 700لیزرلینڈ لیولنگ یونٹ کاشتکاروں کو فراہم کئے گئے ہیں جن پر مجموعی طور پر 15کروڑ 75لاکھ روپے کی سبسڈی فراہم کی گئی ہے۔

Copy Rights @ ZaraiMedia.com

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More