کپاس کی 5نان بی ٹی اور دھان کی 4نئی اقسام کی کاشت کے لئے منظوری

25 May 2013

agriculture_news
agriculture_news

پنجاب سیڈ کونسل کا اجلاس، کپاس کی 20نئی اقسام منظوری کے لئے پیش کی گئیں،15بی ٹی اقسام کی منظوری کا فیصلہ اگلے اجلاس تک مؤخرکر دیا گیا دھان کی قسم ایرآئزسوئفٹ کی عام کاشت کے لئے منظوری ، 3نئی اقسام KSK-434، PK-386اور PS-2کی منظوری سرٹیفکیٹ کے اجراء سے مشروط

لاہور (کامرس رپورٹر) پنجاب سیڈ کونسل نے کپاس کی 5نان بی ٹی اور دھان کی 4نئی اقسام کی عام کاشت کیلئے منظوری دی ہے ۔

نگران صوبائی وزیر زراعت پنجاب قیصر ذوالفقار خان کی زیر صدارت کپاس اور دھان کی نئی اقسام کی منظوری کیلئے پنجاب سیڈ کونسل کا 43واں اجلاس زراعت ہاؤس لاہور میں منعقد ہوا۔
اجلاس میں مومن آغا سپیشل سیکرٹری (مارکیٹنگ) محکمہ زراعت پنجاب، ڈاکٹر اجمل حیدر شاہ مینیجنگ ڈائریکٹر پنجاب سیڈ کارپوریشن، ڈاکٹر نور الاسلام ڈائریکٹر جنرل زراعت (ریسرچ)، ڈاکٹر انجم علی ڈائریکٹر جنرل زراعت (توسیع)، پاکستان ایگریکلچر ریسرچ کونسل ، ڈائریکٹر جنرل فیڈرل سیڈ سرٹیفکیشن اینڈ رجسٹریشن ڈیپارٹمنٹ ، نیاب، نبجی، پاکستان کاٹن جنرز ایسوسی ایشن ، اپٹما ،کاشتکاروں کے نمائندوں ، زرعی سائنسدانوں اور محکمہ زراعت کے اعلیٰ افسران نے شرکت کی۔
اجلاس میں کپاس کی 20نئی اقسام اوردھان کی 7نئی اقسام منظوری کیلئے پیش کی گئیں۔ تفصیلی غور و خوض اور ریسرچ کے مواد کا جائزہ لینے کے بعد نبجی (NIBGE)فیصل آباد کی تیار کردہ NN-3، نیاب (NIAB)فیصل آباد کی NIAB-112اور NIAB-KIRAN، سینٹرل کاٹن ریسرچ انسٹی ٹیوٹ ملتان کی CIM-608اور گوہر سیڈ کارپوریشن ملتان کی تیار کردہ GS-1کی عام کاشت کیلئے منظوری دی گئی جبکہ دھان کی 4نئی منظور شدہ اقسام میں بائیر پاکستان پرائیویٹ لمیٹڈ کی تیار کردہ Arize-Swiftکی عام کاشت کے لئے منظوری دی گئی جبکہ رائس ریسرچ انسٹی ٹیوٹ کالا شاہ کاکو کی تیار کردہ دھان کی 3نئی اقسام KSK-434، PK-386اور PS-2کی منظوری کو ڈائریکٹر جنرل فیڈرل سیڈ سرٹیفکیشن و رجسٹریشن ڈیپارٹمنٹ کی طرف سے سرٹیفکیٹ کے اجراء سے مشروط کیاگیا۔ کپاس کی 15بی ٹی اقسام کی منظوری کا فیصلہ نیشنل بائیو سیفٹی کمیٹی کی طرف سے کمرشلائزیشن لائسنس سے متعلق حتمی فیصلہ کی روشنی میں پنجاب سیڈ کونسل کے آئندہ اجلاس تک مؤخر کر دیا گیا۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے نگران صوبائی وزیر زراعت پنجاب نے زرعی سائنسدانوں کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ اس وقت ملک کو کپاس سمیت دیگر اہم فصلات کی بیماریوں کے خلاف مدافعت اور زیادہ پیداواری صلاحیت رکھنے والی اقسام کی اشد ضرورت ہے اور ان اقسام کی تیاری کیلئے زرعی سائنسدان اپنی تمام تر صلاحیتوں کو بروئے کار لا رہے ہیں۔ انہوں نے پنجاب سیڈ کونسل کی طرف سے فصلات کی نئی اقسام تیار کرنے والے زرعی سائنسدانوں کو مناسب اعزازات دینے کی بھی تجویز دی۔ذرائع دنیا
Published: Zarai Media Team

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More