فشریز کے ٹیکنیکل عملے کو بیرون ملک تربیت دلائی جائےگی

24 May 2013

جدید سائنسی طریقہ کارسے مچھلی کی نسل اورآمدنی بڑھائی جا سکتی ہے، غلام جسکانی محکمے کے افسران ماہی گیروں اور فارمرزکی آگہی کیلئےسیمینارزمنعقد کریں،نگراں وزیر

ٹھٹھہ(دنیا ڈیسک )نگران صوبائی وزیر فشریز و لائیو اسٹاک رئیس غلام قاسم جسکانی نے کہا ہے کہ فشریز آمدنی کا بڑا ذریعہ ہونے کے ساتھ روزگار کا بھی بہترین ذریعہ ہے-

۔جدید سائنسی طریقہ کار استعمال میں لاکر نہ صرف مچھلی کے نسل بڑھائی جا سکتی ہے بلکہ مختلف بیماریوں سے بچاؤ اور آمدنی میں بھی اضافہ کیا جا سکتا ہے۔
یہ بات انہوں نے فشریز ہئچری اور فشریز ٹریننگ و ریسرچ سینٹر چلیا کے دورے دوران کہی ۔
ان کا کہنا تھا کہ محکمہ فشریز کے ٹیکنیکل عملے کو بیرون ممالک سے تربیت حاصل دلا نے کی کوششیں کی جا رہی ہیں تاکہ مچھلی کی نسل بڑھا کر ماہی گیروں اور فارمرز کو زیادہ سے زیادہ فائدہ دلا یا جا سکے، انہوں نے محکمہ فشریز کے افسران کو ہدایت کی کہ مچھلی کے اضافے اور مختلف بیماریوں سے بچاؤسے متعلق سیمینار منعقد کیے جائیں تاکہ ماہی گیروں اور فارمرز کو آگہی فراہم کی جاسکے اور ان کی آمدنی میں بھی اضافہ کیا جا سکے۔ذرائع دنیا
Published: Zarai Media Team
Fishries

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More