ایران پر پابندیاں ، آم برآمد نہ ہونے سے ایک کروڑ ڈالر کا نقصان

24 May 2013
امریکہ اور آسٹریلیا کوبھی مسائل کے باعث کمرشل برآمد شروع نہیں ہو سکیکراچی: ایران پر مغربی ممالک کی اقتصادی پابندیوں کی وجہ سے اس سال پاکستان کو آم کی برآمد نہ ہونے سے ایک کروڑ کا ڈالر نقصان ہوگا۔

آل پاکستان فروٹ اینڈ و یجیٹیبل ایسوسی ایشن کے چیئرمین وحید احمد کا کہنا ہے کہ ایران30ہزار ٹن پاکستانی آم کا خریدار رہا ہے ۔
پاکستانی بینکوں نے ایران کے ساتھ تجارتی لین دین بند کر دیا ہے ، جس سے آم کے برآمد کنندگان کو ایک کروڑ ڈالر کے نقصان کا سامنا ہے ۔
تاہم ایران کے ساتھ قانونی تجارت بند ہونے سے غیر قانونی سطح پر زمینی راستوں سے سمگلنگ بڑھ رہی ہے ۔دوسری جانب امریکہ کو آم کی برآمد کی منظوری کے باوجود ہوائی سروس اور پورٹس پر مسائل کے باعث کمرشل برآمدشروع نہیں کی جاسکی ہے ۔
جبکہ آسٹریلیا کو بھی آم کی برآمد کے سلسلے میں کوئی پیش رفت نہیں ہوئی ہے ۔
وحید احمد نے بتایا کہ پاکستان اس وقت40ممالک کو آم برآمد کر رہا ہے اور اس سال خصوصاً جاپان، آسٹریلیا، جنوبی کوریا ، امریکہ ، ماریشس اور لبنان کو آم برآمد کیا جائے گا۔ذرائع,اے پی اے
Published: Zarai Media Team
Mango Export, Pakistani Mangoes

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More