زرعی شعبے کی ترقی میں معاون PARC

Pakistan Agricultural Research Council
Pakistan Agricultural Research Council

Pakistan Agricultural Research Council

بین الصوبائی رابطہ کمیٹی (IPARRC) کا اجلاس

اسلام آباد:( زرعی میڈیا ڈاٹ کام)PARC چاروں صوبوں بشمول گلگت بلتستان کی باہمی مشاورت سے زراعت کے شعبہ کے فروغ کے لئے ترجیحات کا تعین کرے گی ۔ اور تمام پالیسی ساز اداروں کو نئے پروجیکٹس بنانے اور پسماندہ علاقوں کو فوکس کرنے کو اولیت حاصل ہو گی۔ جو آئندہ ملک میں زرعی شعبے کی ترقی میں معاون ثابت ہونگے۔ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر افتخار احمد چئیرمین PARC نے بین الصوبائی رابطہ کمیٹی IPARRC Inter-provincial Agricultural Research Coordination Committee کے اجلاس میں کی جسکی ملک بھر سے زرعی ماہرین و اعلی حکام نے بھرپور شرکت کی۔

بین الصوبائی رابطہ کمیٹی IPARRC Inter-provincial Agricultural Research Coordination Committee کا اجلاس زیر صدارت ڈاکٹر افتخار احمد چئیرمین PARC منعقد ہوا۔ جسمیں چاروں صوبوں سے زرعی ماہرین نے شرکت کی۔ چئیرمین PARC نے زرعی ماہرین کو مخاطب کر کے کہا کہ فوڈ سیکورٹی کی ضمن میں زرعی ماہرین پر بھاری ذمہ داریاں عائد ہوتی ہیں۔ کہ وہ زرعی تحقیق ، جدید ٹیکنالوجی کے استعمال کے نتیجہ میں فی ایکڑپیداوار میں اضافہ ہوبلکہ فارمرز بھی اس بات کا خاص خیال رکھا جائے۔ کہ وہ Result Oriented ہوں اور Impact Factor سے اسکی کارکردگی کو سراہا جائے۔

اجلاس کے آرگنائزر Coordination Division کے سربراہ نے اس ڈویژن کے خدوخال اور مقاصد پر روشنی ڈالی۔ اور اسکی افادیت کو جُملہ شعبہ جات کیلئے سنگ میل قرار دیا۔ ڈائریکٹر پلاننگ ڈویژن PARC نے ALP Sect کے کردار، مقاصد اور زرعی تحقیق میں معاونت سے شُرکاء اجلاس کو آگاہ کیا۔ PARC کے ٹیکنیکل ڈویژن کے ممبرز برائے پلانٹ سائنسز ، نیچرل ریسورسز، اینمل سائنسز اور سوشل سائنسز نے PARC کے پچھلے دو سال کی کارکردگی راواں پراجیکٹس اور میتھن ٹارگٹس اور آئندہ کی ترجیحات سے آگاہ کیا۔ اور ماہرین سے انکے صوبوں میں عصرِ حاضر کے تقاضوں کی مناسبت سے تجاویز مانگیں۔ زرعی
ماہرین نے مستقبل کی ترجیحات اور ملکی ضروریات کو پیش نظر رکھتے ہوئے پراجیکٹس اور تجاویز دیں۔ جسکے دور رس اثرات زرعی شعبے کی ترقی میں معاوں و مددگار ثابت ہوں گے۔Copyright: Zaraimedia.com

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More