3 روزہ پنجاب لائیوسٹاک شو 2013 کا پتوکی میں انعقاد

 پنجاب لائیوسٹاک شو
پنجاب لائیوسٹاک شو

تاریخ: 09 ا پریل 2013

(زرعی میڈیا ڈاٹ کام ): محکمہ لائیوسٹاک اینڈ ڈیری ڈویلپمنٹ ۱ور یونیورسٹی آف ویٹرنری اینڈ اینیمل سائنسز کے تعاون سے 6 تا 8 اپریل 2013ء کو تین روزہ پنجاب لائیوسٹاک شو کا انعقاد بفلو ریسرچ انسٹیٹیوٹ پتوکی ضلع قصور میں ہوا جس میں پنجاب بھر سے محکمہ لائیوسٹاک کے اعلٰی افسران، ویٹرنری اداروں، بریڈرز ایسوسی ایشنز اور فارماسیوٹیکل کمپنیوں کے نمائندگان، سٹیک ہولڈرز اور مویشی پال حضرات نے شرکت کی۔

پنجاب لائیوسٹاک شو میں بھینسوں اور گائیوں کے مابین دودھ اور خوبصورتی کے مقابلہ جات بھی منعقد کروائے گئے جس میں ملتان کے محمد یوسف ڈوگر کی بھینس نے 36 گھنٹوں میں 47.239 کلو گرام دودھ دے کر مقابلہ دودھ میں اول پوزیشن حاصل کی۔

اس شو میں فیصل آباد سے رانا جاوید اقبال کی بھینس نے 45.118 کلو دودھ کے ساتھ دوسری جبکہ فیصل آباد ہی کے چوہدری نذیر احمد کی بھینس نے 42.639 کلو دودھ کے ساتھ تیسری پوزیشن حاصل کی۔

اسی طرح ساہیوال نسل کی گائیوں میں دودھ دینے کے مقابلہ میں خانیوال سے سردار آفتاب احمد خاں وٹو کی گائیوں نے 36.155 کلو گرام اور 35.541 کلو گرام دودھ دے کر بالترتیب پہلی اور دوسری پوزیشن حاصل کی جبکہ فیصل آباد کے رانا افضل احمد خاں کی گائے 30.813 کلوگرام دودھ دے کر تیسرے نمبر پر رہی۔

لائیوسٹاک شو میں مختلف اداروں، آرگنائزیشنز اور میڈیسن کمپنیوں کی جانب سے سٹالز بھی لگائے گئے۔ اس موقع پر ڈاکٹر اسرار حسین ڈائریکٹر کمیونیکیشن اینڈ ایکسٹینشن کی ہدایات پر ڈاکٹر محمد صادق گل ڈپٹی ڈائریکٹر کمیونیکیشن اینڈ ایکسٹینشن کی سربراہی میں سٹال کا اہتمام کیا گیا جس کے تحت محکمہ لائیوسٹاک کا معلوماتی لٹریچر، ماہانہ میگزین، فزیبلیٹی رپورٹس، لیف لیٹس، بروشرز اور دیگر متعلقہ معلومات شرکاء کو موقع پر مفت فراہم کی گئیں۔

لائیوسٹاک شو کے اختتام پر ڈاکٹر ظفر جمیل گل ڈائریکٹر جنرل (ریسرچ)، پروفیسر ڈاکٹر طلعت نصیر پاشا وائس چانسلر یونیورسٹی آف ویٹرنری اینڈ اینیمل سائنسز لاہور، ڈاکٹر کے پی اپل ایڈوائزر لائیوسٹاک بورڈ پنجاب انڈیا نے مقابلہ جات میں پوزیشن حاصل کرنے والے مویشیوں کے مالکان میں انعامات تقسیم کیے۔

پریس ریلیز(محکمہ لائیوسٹاک)
Livestock
Copyright: Zaraimedia.com

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More