زرعی سائنسدانوں کو بائیالوجیکل کنٹرول پر توجہ مر کوز کرنا ہو گی

زرعی یونیورسٹی فیصل آبادہینڈ آؤٹ

Pakistan agricultural Scientists
Pakistan agricultural Scientists

فیصل آباد9اپریل (زرعی میڈیا ڈاٹ کام )ہائر ایجوکیشن کمیشن کی ڈائریکٹر جنرل کوالٹی ایشورنس ضیاء بتول نے کہا ہے کہ ٹنیور ٹریک سسٹم کے علاوہ کوالٹی ایشورنس کے حوالے سے زرعی یونیورسٹی فیصل آباد ملک کی دیگر جامعات کے لئے رول ماڈل کی حیثیت رکھتی ہے یہی وجہ ہے کہ پبلک و پرائیویٹ سیکٹر یونیورسٹیوں کو جامعہ زرعیہ کی طرز پر اپنا سسٹم استوار کرنے کے لئے ہائر ایجوکیشن کمیشن ہدایات جاری کر تا رہتا ہے ۔

ان باتوں کا اظہار انہوں نے یونیورسٹی کے شعبہ انٹو مالوجی کے چیئر مین پروفیسر ڈاکٹر محمد جلال عارف سے مختلف لیبارٹریوں کے دورے کے دوران کیا ۔ انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی سطح پر فطرت کے نظام کی بحالی اور بائیو ڈائیورسٹی کی اہمیت کے پیش نظر جدید خطوط پر پیش رفت دیکھنے میں آرہی ہے لہذا زرعی سائنسدانوں کو خطرناک کیمیائی زہریلے مواد کے سپرے کی مقدار کو کم سے کم سطح پر لاتے ہوئے بائیالوجیکل کنٹرول پر توجہ مر کوز کرنا ہو گی ۔

انہوں نے کہا کہ انٹو مالوجی میں مر بوط طریقہ انسداد کے تحت کسان دوست کیڑوں کی پرورش اور انہیں کھیتوں میں ضرررساں کیڑوں کے خاتمے کے لئے استعمال کرنے کا رحجان حوصلہ افزا ہے جسے سرکاری سطح پر فروغ حاصل ہونا چاہئے ۔ محترمہ ضیاء بتول نے کہا کہ ہائر ایجوکیشن کمیشن ملک کی تمام جامعات میں ایک جیسے نصاب اور تحقیق و تدریس میں کوالٹی جیسے امور پر موثر نظام تشکیل دے چکا ہے جس کی وجہ سے پاکستان کے معیار تعلیم میں بہتری دیکھنے میں آئی ہے ۔

انہوں نے کہا کہ تحقیقی جرائد کو بہتری سے ہمکنار کرنے کے لئے بین الاقوامی سائنسدانوں کے مقالہ جات کے ساتھ ساتھ بیرونی دنیا کے ماہرین کو ادارتی پینل میں شامل کرنا بے حد اہمیت کا حامل ہے ۔

انہوں نے پاکستان انٹو مالوجسٹ کی زیڈکیٹگری سے وائی کیٹگری میں ترقی کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے توقع ظاہر کی کہ آئندہ چند ماہ میں ڈاکٹر جلال عارف کی زیر ادارت یہ جریدہ ایکس کیٹگری کے حصول میں کامیاب ہو جائے گا جس کے بعد دنیا بھر کے محققین اپنی تحقیقی کاوشیں اس میں شائع کروانا شروع کر دیں گے ۔

جریدے کے مدیر اعلیٰ اور چیئر مین شعبہ انٹو مالوجی ڈاکٹر محمد جلال عارف نے بتایا کہ انہوں نے اس تحقیقی جرنل میں امریکہ سمیت دنیا کے ترقی یافتہ ممالک کے سائنسدانوں کو ایڈیٹوریل پینل میں شامل کرنے کے ساتھ ساتھ ان کے مقالہ جات بھی شامل کئے ہیں اور پوری دنیا سے اس آن لائن جرنل کی بھر پور پذیرائی کی جا رہی ہے ۔ ضیاء بتول نے بعد ازاں شعبہ انٹو مالوجی کی لیبارٹریوں کا دورہ بھی کیا اور یہاں پر ہونے والی تحقیق کو کسانوں اور ملکی زراعت کے لئے سود مند قرار دیا ۔

Pakistan Agricultural Scientists

Copyright: Zaraimedia.com

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More