دنیا میں غذائی بحران پیدا ہونے کا خدشہ: آسٹریلوی سائنسدان

زرعی یونیورسٹی فیصل آبادہینڈ آؤٹ

آسٹریلوی سائنسدان پروفیسر راب فزگرالڈ نے کہاہے کہ دنیا میں غلے کی پیدا وار 0.9 فیصد سالانہ کی شرح سے بڑھ رہی ہے جبکہ آبادی کی رفتار 1.7 فیصد سالانہ ہے
آسٹریلوی سائنسدان پروفیسر راب فزگرالڈ نے کہاہے کہ دنیا میں غلے کی پیدا وار 0.9 فیصد سالانہ کی شرح سے بڑھ رہی ہے جبکہ آبادی کی رفتار 1.7 فیصد سالانہ ہے

فیصل آباد یکم اپریل ( )آسٹریلوی سائنسدان پروفیسر راب فزگرالڈ نے کہاہے کہ دنیا میں غلے کی پیدا وار 0.9 فیصد سالانہ کی شرح سے بڑھ رہی ہے جبکہ آبادی کی رفتار 1.7 فیصد سالانہ ہے جس کی وجہ سے آنے والے سالوں میں دنیا میں غذائی بحران پیدا ہونے کا خدشہ ہے جس سے عہد ہ برا ہونے کے لئے سائنسدانوں کو مل جل کر کوششیں کرنا ہوں گی ۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے زرعی یونیورسٹی فیصل آباد کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر اقرار احمد خاں کے ساتھ ان کے چیمبر میں ملاقات کے دوران کیا ۔ انہوں نے کہا کہ آسٹریلین سیکٹر لنکجز پرو گرام کے تحت پاکستان میں آسٹریلوی حکومت کی مدد سے ترشاوا پھلوں ‘ ڈیری سیکٹر اور آم کی پیدا وار میں اضافے اور سپلائی چین نظام کی ترقی کے لئے جدید خطوط پر پیش رفت جاری ہے ۔
یونیورسٹی آف کینبرا کی پروفیسر ڈاکٹر سینڈرا ہینی مصطفی نے بتایا کہ پاکستان میں بیس لائن سر وے پر زرعی یونیورسٹی فیصل آباد اور دیگر تحقیقی اداروں کی مدد سے وسیع پیمانے پر کام کا آغاز کر دیا گیا ہے جس کے نتائج دنیا کے بہترین ریسرچ جرنلز میں شائع کئے جائیں گے ‘ وائس چانسلر ڈاکٹر اقرار احمد خاں نے کہا کہ دنیا کی 900 ملین آبادی غذائی کمی سے دو چار ہے خصوصی طور پر تیسری دنیا کے ممالک اس المیے سے زیادہ متاثر ہوئے ہیں ۔
انہوں نے کہا کہ ملک میں غربت کی بڑھتی ہوئی شرح کے باوجود ملک کا پسماندہ طبقہ اپنی غذائی ضروریات کی بجائے مو بائل فون کے استعمال پر اپنی آمدن کا زیادہ حصہ خرچ کر رہا ہے جس کی وجہ سے صحت عامہ کی صورت حال بہتر بنانے میں مشکلات کا سامنا ہے ۔ ڈاکٹر اقرار احمد خاں نے کہا کہ چھوٹے کسانوں کو وسائل سے مالا مال کئے بغیر پیدا واریت کے مطلوبہ ہدف پورے نہیں کئے جا سکتے ۔ ملاقات میں ممتاز صحافی احمد فراز خان ‘ڈاکٹر اظہار احمد خان‘ ڈاکٹر بابر شہباز اور دیگر ماہرین کے علاوہ چیئر مین شعبہ انٹو مالوجی ڈاکٹر محمد جلال عارف بھی موجود تھے ۔

فیصل آباد یکم اپریل ( )زرعی یونیورسٹی فیصل آباد میں جاری 6 روزہ رنگا رنگ ’’جشن بہاراں‘‘ اختتام پذیر ہو گیا ‘میلے کے آخری روز یونیورسٹی ریس کورس گراؤنڈ میں نیزہ بازی اور گھڑ سواری کے فائنل مقابلوں کے علاوہ دودھ دینے والے جانوروں کے ما بین پیدا وار کے مقابلہ جات کا انعقاد کیا گیا ‘ نتائج کے مطابق دودھ کی پیداوار میں کراس بریڈگائے کی کیٹگری میں ملک سر دار کی گائے نے 43.3 لٹر دودھ کے ساتھ پہلا انعام حاصل کیا ‘ بشیر عزیز ایس بی ڈیریز اور رانا افضال احمد خان کی گائے نے بالتر تیب 37.4 اور37.3 لٹر دودھ کے ساتھ دوسری اور تیسری پوزیشن حاصل کی ۔

ساہیوال نسل کی گائے کی کیٹگری میں سر دار آفتاب خان اور عاشق حسین بھٹی کی گائے نے 26.66لٹر اور23.13 لٹر روزانہ دودھ کی پیدا وار کا پہلا اور دوسرا انعام جیت لیا ۔ نیلی راوی بھینس کی کیٹگری میں نذیر احمد گجر کی بھینس نے 28 لٹر دودھ کے ساتھ پہلا ‘ رانا عبد الستار کی بھینس نے 27.22 لٹر جبکہ نذیر احمد کی بھینس 27.2 لٹر دودھ کے ساتھ تیسرا انعام حاصل کیا ۔ زرعی نمائش میں مونسنٹو پاکستان کے سٹال کو مجموعی طور پر پہلے انعام کا حقدار قرار دیا گیا ‘ ترکی کے رومی فورم کا سٹال دوسرے نمبر پر رہا جبکہ انڈومنٹ فنڈ سیکرٹریٹ زرعی یونیورسٹی فیصل آباد کو تیسری پوزیشن حاصل رہی ۔
زرعی نمائش میں یونیورسٹی کی تاریخ میں پہلی مرتبہ شعبہ انٹو مالوجی نے بہترین سٹال کا پہلا انعام حاصل کیا اور چیئر مین ڈاکٹر محمد جلال عارف نے مہمان خصوصی ڈاکٹر اقرار احمد خاں سے ٹرافی حاصل کی ‘ پھولوں کی نمائش کا میلہ مجموعی طور پر ایوب زرعی تحقیقاتی ادارہ فیصل آباد نے لوٹ لیا ‘ پینم کینسر ہسپتال نے دوسری پوزیشن حاصل کی جبکہ پرائیویٹ اداروں میں ستارہ کیمیکلز نے پہلی پوزیشن حاصل کی ‘ مہمان خصوصی ڈاکٹر اقرار احمد خاں نے انعام یافتگان کو نقد رقوم کے علاوہ ٹرافیاں ‘ شیلڈز اور سرٹیفکیٹس عطا کئے ۔
University of Agriculture Faisalabad (UAF),
Copyright: Zaraimedia.com

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More