جرمنی: پھل، سبزیوں کی نمائش،15 لاکھ یورو کے آرڈرز کا امکان

ہفتہ 9 فروری 2013
15 کمپنیاں اپنی پھل، سبزیاں، مینگو پلپ اور کنسٹریٹ ڈسپلے کررہی ہیں
15 کمپنیاں اپنی پھل، سبزیاں، مینگو پلپ اور کنسٹریٹ ڈسپلے کررہی ہیں

کراچی: جرمنی میں جاری پھل اور سبزیوں کی نمائش میں پاکستانی ایکسپورٹرز کو ایک سے ڈیرھ ملین یورو کے برآمدی آرڈرز ملنے کی توقع ہے۔

گزشتہ سال ایک ملین یورو کے برآمدی آرڈرز ملے تھے۔ اگلے پانچ سال میں یورپی منڈی میں پاکستانی پھل اور سبزیوں کی برآمدات 25ملین یورو تک پہنچانے کی حکمت عملی پر کام جاری ہے۔ آل پاکستان فروٹ اینڈ ویجیٹبل امپورٹرز ایکسپورٹرز اینڈ مرچنتس ایسوسی ایشن کے مطابق نمائش میں پاکستان کے 15 سرفہرست کمپنیاں اپنی مصنوعات پھل سبزیاں مینگو پلپ اور کنسٹریٹ ڈسپلے کررہی ہیں۔

نمائش میں پاکستان کے 50 ایکسپورٹرز، کاشتکار اور تاجر بھی شرکت کررہے ہیں جو نمائش میں رکھی گئی مصنوعات کے ساتھ جدید ٹیکنالوجی، ادویات، پیکنگ اینڈ پراسیسنگ مشینری کے بارے میں آگاہی حاصل کریں گے۔ وحید احمد کے مطابق آل پاکستان فروٹ اینڈ ویجیٹبل امپورٹرز ایکسپورٹرز اینڈ مرچنٹس ایسوسی ایشن نمائش میں بھرپور شرکت کررہی ہے تاکہ نمائش سے یورپ سمیت دیگر اہم منڈیوں تک پاکستانی پھل اور سبزیوں کی رسائی کو ممکن بنایا جاسکے۔

نمائش 6 سے8 فروری تک جارہی رہیگی نمائش کے پہلے روز غیرملکی وزیٹرز کی بڑی تعداد نے پاکستانی پویلین کا دورہ کیا اور پاکستانی پھل سبزیوں سمیت ویلیو ایڈڈ مصنوعات مینگو پلپ اور ایپل کنسٹریٹ میں گہری دلچسپی ظاہر کی۔ نمائش میں پاکستان ہارٹی کلچر ڈیولپمنٹ کمپنی سمیت دیگر اہم ادارے بھی شریک ہیں او ران اداروں نے اسٹال بھی لگارکھے ہیں۔

وحید احمد کے مطابق یورپی منڈی میں پاکستانی پھل بالخصوص آم اور کینو کا کوئی مقابل نہیں ہے تاہم پاکستان کو اپنی مصنوعات بہتر معیار کے ساتھ یورپ جیسی ہائی ویلیو مارکیٹ تک بھیجنے میں سپلائی چین اور ویلیو ایڈیشن سے متعلق مسائل درپیش ہیں پاکستانی پھل اور سبزیوں کی برآمدات بڑھانے میں فروٹ لاجسٹیکا کو اہمیت حاصل ہے۔

Courtesy:Express

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More