منافع خوروں نے خشک میوہ جات کی قیمتوں میں مصنوعی اضافہ کیا

ہفتہ 3 فروری 2013

Dry Fruits Market
Dry Fruits Market

اسلام آباد (اے پی پی) خشک میوہ جات کی قیمتوں میں مصنوعی اضافے کے باوجود رواں سردیوں کے دوران ان کی فروخت میں نمایاں اضافہ ہوا ، گزشتہ سال کی قیمتوں کے مقابلے میں رواں سال چلغوزہ، بادام، پستہ اوردیگر خشک میوہ جات کی فروخت زیادہ رہی ہے۔ ہول سیلرز کے مطابق رواں سال افغانستان اورقبائلی علاقوں سے آنے والے چلغوزے کی قیمتیں گزشتہ سال کے مقابلے میں کافی حد تک کم رہیں اور یہ 2200 تا 2000 روپے سے کم ہوکر1400 روپے فی کلو پرآگئیں ،چھوٹے دکانداروں نےچلغوزہ 1600 روپے فی کلو فروخت کیا تاہم بڑے اسٹورز پر زائد منافع کے حصول کے لیے چلغوزے کی قیمت زیادہ وصول کی گئی اور یہ گزشتہ سال کے داموں کے مقابلے میں زیادہ مہنگا 2400 تا 2600 روپے فی کلو میں فروخت کیا گیا ، ذرائع نے بتایا کہ رواں مالی سال جولائی تا دسمبر کے دوران39.4ملین ڈالر مالیت کے 53 ہزار50 ٹن خشک میوے درآمد کئے گئے جبکہ گزشتہ مالی سال کے اسی عرصے میں 46 ہزار211 ٹن خشت میوہ جات درآمد کئے گئے تھے جن کی مالیت 39 ملین ڈالر تھی۔ تاجروں کا کہنا ہے کہ رواں سردیوں کے دوران چین نے چلغوزہ کم درآمدکیا جس کے باعث اس کی قیمتوں میں نمایاں کمی واقع ہوئی ہے۔

Courtesy:Dunya

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More