سندھ،سالانہ 5 لاکھ جانور امراض کا شکار، 3 لاکھ ہلاک

2013-جنوری 13

سالانہ 5 لاکھ جانور امراض کا شکار، 3 لاکھ ہلاک
سالانہ 5 لاکھ جانور امراض کا شکار، 3 لاکھ ہلاک

حکومت وٹرنری اسپتالوں کو فعال کرکےڈاکٹرزتعینات کرے،ڈاکٹر فرمان علی

کراچی(اسٹاف رپورٹر)کراچی سمیت صوبے بھر میں ہر سال 5لاکھ سے زائد جانورمختلف بیماریوں کا شکار ہوتے ہیں جن میں سے 3لاکھ کو علاج و معالجہ کی فوری سہولیات میسر نہ ہونے کی وجہ سے ہلاک ہوجاتے ہیں جس کی وجہ سے غریب افراد کی مالی مشکلات میں اضافہ ہورہاہے ،سرد موسم میں گلا ،گھٹنے،نزلہ زکام،بخار کی وجہ سے جانوروں کی اموات کے کیسز رپورٹ ہوناشروع ہوگئے ہیں جن کو سردی سے بچانے کی ضرورت ہے حکومت کو چاہیے کہ وہ صوبے بھر میں موجود وٹرنری اسپتالوں کو فعال کرکے وہاں پر 24گھنٹے ڈاکٹروں کی تعیناتی کو یقینی بنائےبصورت دیگر جانوروں کی شرح اموات کو روکنا مشکل ہوگا۔یہ بات پاکستان وٹرنری میڈیکل ایسوسی ایشن سندھ کے وٹرنری ڈاکٹر فرمان علی لغاری نے روزنامہ ’’دنیا ‘‘ سے بات چیت کرتے ہوئے کہی۔انہوں نے کہا کہ اس وقت صوبے بھر میں 975ویٹنری اسپتال وکلینک ہیں جن میں سے درجنوں پر نجی اور اداوں کے قبضے ہیں جہاں پر صرف314ویٹنری ڈاکٹرز کو تعینات کیا گیا ہے جبکہ 2ہزار سے زائد ویٹنری ڈاکٹرز بے روز ہیں اور ایسوسی ایشن کی چیخ پکار کے بعد حکومت نے چند ماہ قبل ہی چند ڈاکٹروں کو مختلف اسپتالوں اور کلینک میں تعینات کیا ہے جہاں پر جانوروں کی ادویات کی بھی شدید قلت ہے ۔انہوں نے کہا کہ تعینات کیے جانے والے ڈاکٹروں کی تعداد کم ہے اور ان کی ٹائمنگ بھی صبح 10بجے سے سہ پہر 2 بجے تک ہوتی ہے لیکن اس کے بعد ایمرجنسی میں آنے والے مریض جانوروں کی دیکھ بھال کرنے والا کوئی نہیں ہوتا جس کی وجہ سے متعدد جانورہلاک ہوجاتے ہیں۔ ویٹنری ڈاکٹر فرمان علی لغاری نے کہا کہ صوبے بھر کے اضلاع میں سردی کے موسم میں بھینسیں گلہ گھنٹے کی وجہ سے جبکہ بکریوں اور بھیڑوں میں پھیپھڑوں،جگر،کھر کی نرمی سمیت دیگر بیماریاں جنم لیتی ہیں جوکہ ان کی اموات کا سبب بنتی ہیں لہذا انہیں سرد موسم سے بچانے کے لئے بند کمروں میں رکھا جائے اور ان کی دیکھ بھال کی جائے۔انہوں نے کہا کہ کراچی کے مختلف ٹاؤنز جس میں لانڈھی،گڈاپ سمیت دیگرٹاؤنز میں بھی چند وینٹری اسپتال و کلینک موجود ہیں جہاں پر ڈاکٹروں کی کمی ہے لہذا اس کمی کو فوری طورپر پورا کیا جائے تاکہ جانوروں کی شرح اموات میں کمی لائی جاسکے۔ جانور بیمار

Courtesy: Duniya

Copyright:  Zaraimedia.com

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More