پلانٹ بریڈنگ اینڈ جنیٹکس

تاریخ: 11جنوری 2013
پلانٹ بریڈنگ اینڈ جنیٹکس
پلانٹ بریڈنگ اینڈ جنیٹکس

فیصل آباد 11۔ جنوری 2013ء ( ) زرعی یونیورسٹی فیصل آباد کے شعبہ پلانٹ بریڈنگ اینڈ جنیٹکس کے زیراہتمام ملک میں خوردنی تیل کے ضمن میں240ارب روپے کے سالانہ درآمدی بل کو کم کرنے اور خوردنی تیل میں خودکفالت کیلئے سرسوں کی نئی قسم یو اے ایف11دریافت کر لی ہے۔اس حوالے سے یونیورسٹی میں کلیہ زراعت کے فارمرز سنڈیکیٹ ہال میں اس نئی قسم کو کاشت کرنے والے کاشتکاروں کے خیالات و مشاہدات پر مبنی کسان کنونشن آج 8جنوری 2013ء کو منعقد ہوگا۔ شعبہ کے چیئرمین و میزبان پروفیسرڈاکٹر عبدالسلام خاں کے مطابق صبح دس بجے شروع ہونے والے کسان کنونشن میں کم دورانیئے یعنی دو ماہ میں کاشت سے برداشت تک پہنچنے والی فصل کے حوالے سے کاشتکار اپنے تجربات سے آگاہ کریں گے۔ یو اے ایف 11کی خصوصیت بیان کرتے ہوئے شعبہ میں ریسرچ گروپ لیڈر پروفیسرڈاکٹر حفیظ احمد صداقت نے بتایا کہ ان کی زیرنگرانی یونیورسٹی سائنس دانوں کی ٹیم نے کم دورانیہ پر مبنی سرسوں کی جو نئی قسم دریافت کی ہے ‘ اس کی فی ایکڑ پیداوار 40سے 45من ہے جو سرسوں کی عمومی 8من فی ایکڑ اوسط پیداوار سے 5گنا زیادہ ہے۔انہوں نے بتایا کہ سرسوں کی ایک عام فصل میں 35تا 40فیصد تک خوردنی تیل نکالا جاسکتا ہے جبکہ یو اے ایف 11میں تیل کی مقدار 50فیصد کے لگ بھگ ہے۔ انہوں نے بتایا کہ گزشتہ ربیع فیسٹیول کے دوران یونیورسٹی آنے والے 2ہزار سے زائد کاشتکاروں میں سرسوں کا چار ہزار کلوگرام بیج تقسیم کیا گیا تھا تاکہ سرسوں کی کاشت کو فروغ دے کر ملک میں آبادی کے بڑھتے ہوئے دباؤ کے نتیجہ میں خوردنی تیل کے درآمدی بل کو کم سے کم کیا جا سکے۔

زرعی یونیورسٹی فیصل آباد ہینڈ

Copyright @ Zaraimedia.com

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More